ریچھ کے حملے کا نشانہ بننے والے شخص نے باغبانی قینچی سے خود کو بچا لیا

ہوکائیدو: پولیس نے پیر کو کہا، ہوکائیدو میں ایک آدمی نے باغبانی قینچی کی بدولت اپنی جانب بچا لی جب اس پر ایک ریچھ نے حملہ کر دیا تھا۔

پولیس کے مطابق، 53 سالہ تاکاشی اوکابے اتوار کی صبح ہوکائیدو کے شینھی داکا میں اپنے بیٹے اور ایک دوست کے ہمراہ پہاڑوں میں کھانے کے قابل جنگلی پودے اکٹھے کر رہا تھا جب یہ واقعہ پیش آیا۔ ٹی بی ایس نے اطلاع دی کہ صبح 10 بجے کے قریب پہاڑوں پر پہنچنے کے ذرا ہی دیر بعد اوکابے نے ہنگامی خدمات کو کال کی اور اطلاع دی کہ 2 میٹر لمبے ریچھ نے اس پر حملہ کیا ہے۔

اوکابے کو جانور نے چہرے اور سینے پر کئی مرتبہ پنجے وغیرہ مارے تھے، تاہم وہ باغبانی قینچی، جو وہ اپنے ساتھ لے گیا تھا، کے ذریعے خود کو ریچھ کے ہاتھوں سنگین زخم لگوانے سے محفوظ رہا۔

ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ اوکابے کی زندگی خطرے میں نہیں اور وہ ہوش میں ہے۔ ٹیموں نے بار بار ریچھ کی تلاش کی ہے تاہم اسے ڈھونڈ نہیں سکے۔ پولیس رہائشیوں کو خبردار کر رہی ہے کہ علاقے میں ریچھ کے حملوں بارے ہوشیار

آپ کومنٹ میں اپنی رائے دے سکتے ہیں ۔