ٹیوٹا 2 بھارتی کار پلانٹس کی تالہ بندی ختم کرے گا

ممبئی، بھارت: ٹیوٹا موٹرز کا کہنا ہے کہ وہ بھارت میں اپنے دونوں کار اسمبلی پلانٹس میں کارکنوں کی تالہ بندی ختم کرے گا۔

بھارت میں دنیا کے سب سے بڑے کار ساز ادارے کے ذیلی ادارے نے جمعرات کی رات بیان دیا۔ اس نے کہا کہ اس نے اگلے ہفتے سے ملازموں کی کام پر واپسی پر اتفاق کیا ہے۔ کمپنی بنگلور کے باہر واقع 2 پلاٹنس پر 6400 افراد کو ملازمت فراہم کرتی ہے۔

ٹیوٹا نے کہا کہ فیصلہ “قانون کی پابندی کرنے والے ٹیم ممبران” کی مطابقت میں تھا۔ وہ ایک ضابطہ اخلاق پر دستخط کر کے کام پر واپس آ سکیں گے۔

کمپنی نے اتوار کو تالہ بندی کا اعلان کیا تھا۔ اس نے کہا تھا کہ کارکنوں کی بلند اجرتوں نے پیداوار کو تعطل کا شکار کر دیا اور انتظامیہ کو خطرے میں ڈالا۔ اجرتوں پر مذاکرات پچھلے اپریل میں شروع ہوئے تھے اور ابھی تک یہ معاملہ حل نہیں ہو سکا۔

دونوں پلانٹس سالانہ 310,000 گاڑیاں تیار کرتے ہیں۔

آپ کومنٹ میں اپنی رائے دے سکتے ہیں ۔