چین نے عالمی جنگی بحری جہازوں کے اجتماع میں جاپان کو نظر انداز کر دیا

ٹوکیو: چین میں ایک رسمی تقریب کے موقع پر بین الاقوامی جنگی بحری جہازوں کا ایک میلہ منعقد ہو رہا ہے لیکن جاپانی بحریہ کو اس میں مدعو نہیں کیا گیا۔ یہ ایشیا کی دو سب سے بڑی معیشتوں میں جھگڑے تازہ ترین طنزیہ سلوک ہے۔

یہ بین الاقوامی بحری بیڑوں کی نمائش چینی بحریہ کی 65 ویں سالگرہ کے موقع پر منعقد کی جا رہی ہے۔ جاپانی میڈیا کے مطابق، اس میں اگلے ماہ چین کے مشرقی شہر چینگ ڈو کے نزدیک جنگی بحری جہاز بحری مارچ میں حصہ لیں گے۔

جاپانی میڈیا کے خیالات کے مطابق بیجنگ کا اقدام ٹوکیو کو سزا دینے کے لیے تھا۔ دونوں کے درمیان تعلقات تاریخی اختلافات اور ایک علاقائی تنازع کی وجہ سے تُند خوئی کی دلدل میں پھنسے ہوئے ہیں۔ ایک اہلکار نے کہا کہ پانچ برس قبل چین کی میزبانی میں ہونے والے ایسے ہی ایک اجتماع میں بھی جاپان کو مدعو نہیں کیا گیا تھا۔

اگرچہ جاپان بحری بیڑوں کی نمائش میں نظر انداز لگتا ہے، تاہم اسے ایک بحری سپموزیم میں مدعو کیا گیا ہے۔ یہ اسی دوران چینگ ڈو میں منعقد ہو گا اور اس میں ایشیا پیسفک کے خطے کے 20 سے زیادہ ممالک کے اعلی ترین بحری اہلکار شامل ہوں گے۔

آپ کومنٹ میں اپنی رائے دے سکتے ہیں ۔