جاپان نے ایس ڈی ایف کو شمالی کوریا کے نئے میزائل مار گرانے کا حکم دے دیا

ٹوکیو: ایک حکومتی ذریعے نے ہفتے کو کہا، جاپان نے بحیرہ جاپان میں اپنے تباہ کار بحری جہاز کو حکم دیا ہے کہ وہ آنے والے ہفتوں میں شمالی کوریا کی جانب سے داغا گیا کوئی بھی میزائل مار گرائے۔ پیانگ یانگ نے سمندر پر سے ایک درمیانی حد ضرب والا روڈدونگ میزائل داغا تھا۔

قبل ازیں ایک مقامی خبر کے مطابق، وزیرِ دفاع ایتسونوری نے جمعرات کو یہ حکم جاری کیا تھا تاہم اسے عام نہ کیا گیا۔ ٹوکیو اور پیانگ یانگ کے درمیان ایک برس سے زیادہ کے عرصے میں پہلی بار بات چیت پھر سے شروع ہوئی ہے اور حکومت انہیں پھر سے سرد خانے میں نہیں ڈالنا چاہتی تھی۔

ذریعے نے کہا کہ اونودیرا نے پیٹریاٹ میزائل بیٹریاں تعینات نہیں کیں۔ یہ آنے والی حربی انّیوں کے خلاف جاپان کی آخری دفاعی صف بندی ہوتیں۔

روڈونگ میزائل ایسے وقت داغے گئے جب دی ہیگ میں امریکی صدر باراک اوباما اور جنوبی کوریا و جاپان کے لیڈران ملاقات میں مصروف تھے۔ روڈونگ کے بعد کم حدِ ضرب والے کئی راکٹ بھی داغے گئے۔

میزائل داغنے کا بظاہر مقصد شمالی کوریا کی سرکشی دکھانا تھا۔

آپ کومنٹ میں اپنی رائے دے سکتے ہیں ۔